پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے مسائل ہر گزرتے دن کے ساتھ بڑھتے جا رہے ہیں۔رمیز راجہ اور پی ایس ایل مالکان کے درمیان ٹھن گئی ۔ 21

رمیز راجہ اور پی ایس ایل مالکان کے درمیان ٹھن گئی ۔

رمیز راجہ اور پی ایس ایل مالکان کے درمیان ٹھن گئی ۔

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے مسائل ہر گزرتے دن کے ساتھ بڑھتے جا رہے ہیں۔

رمیز راجہ نے صاف الفاظ میں کہا کہ اسے لے لو یا چھوڑ دو۔ ذرائع نے پبلک نیوز کو بتایا کہ پی ایس ایل کے اجلاس کے دوران کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے مالک ندیم عمر نے چیئرمین پی سی بی سے کہا کہ وہ مسائل کو دو ٹوک طریقے سے حل کریں۔

رمیز راجہ بھی غصے میں ندیم عمر کی باتوں کا جواب دیتے رہے۔ ملتان سلطانز کے نمائندے حیدر اظہر نے کہا کہ ڈالر کا ریٹ طے ہونا چاہیے۔ رمیز راجہ نے کہا کہ ڈالر کا ریٹ وہی رہے گا۔

مجھے نیب جانے میں کوئی دلچسپی نہیں۔ پشاور زلمی کے مالک جاوید آفریدی نے رمیز راجہ کو بتایا کہ اگلے تین ماہ پی ایس ایل کے لیے بہت اہم ہیں۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے مالک ندیم عمر نے اجلاس میں کہا کہ اگر مسائل حل نہ ہوئے تو ہم عدالت جائیں گے۔

میں فیصلہ کروں گا۔ پی ایس ایل کا اجلاس گرما گرم بحث کے بعد ختم ہوا ، ابھی تک کوئی حل نہیں ملا ، رمیز راجہ نے فرنچائزز کو ایک ہفتے کا وقت دیا ، چیئرمین پی سی بی نے کہا کہ فیصلہ پی سی بی کو کرنا پڑے گا۔ میٹنگ کے اختتام پر رمیز راجہ نے یہ جملہ دہرایا کہ اسے لے لو اور چھوڑ دو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں